Moozi Maraz Yeh Dil Ka Hae Jab La Dawa Khalish

موذی مرض یہ دل کا ہے جب لادوا خلش

موذی مرض یہ دل کا ہے جب لادوا خلش

ہوتے ہیں لوگ عشق میں کیوں مبتلا خلش

ہر وقت صرف ایک ہی ضد پر اڑا ہے دل

کر دوں میں اس کی چاہ میں خود کو فنا خلش

دنیا کے سارے طور طریقے بدل گئے

تم ڈھونڈتے ہو آج بھی رسمِ وفا خلش

وہ بادشاہِ حسن ہے ادنیٰ سا تو فقیر

ہے تیری اس کے سامنے اوقات کیا خلش

ورنہ خیال دید کا دل سے نکال دے

آنکھوں کو پہلے دید کے قابل بنا خلش

گل کی طلب میں جسم ہی کانٹوں پہ رکھ دیا

دیوانہ پن کی ہے یہ عجب انتہا خلش

عباس خلش

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(705) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abbas Khalish, Moozi Maraz Yeh Dil Ka Hae Jab La Dawa Khalish in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 102 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abbas Khalish.