Maot Se Agay Soch Ke Aana Phir Jee Lena

موت سے آگے سوچ کے آنا پھر جی لینا

موت سے آگے سوچ کے آنا پھر جی لینا

چھوٹی چھوٹی باتوں میں دلچسپی لینا

نرم نظر سے چھونا منظر کی سختی کو

تند ہوا سے چہرے کی شادابی لینا

جذبوں کے دو گھونٹ عقیدوں کے دو لقمے

آگے سوچ کا صحرا ہے کچھ کھا پی لینا

مہنگے سستے دام ہزاروں نام یہ جیون

سوچ سمجھ کر چیز کوئی اچھی سی لینا

آوازوں کے شہر سے بابا کیا ملنا ہے

اپنے اپنے حصے کی خاموشی لینا

دل پر سو راہیں کھولیں انکار نے جس کے

سازؔ اب اس کا نام تشکر سے ہی لینا

عبد الاحد ساز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(380) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdul Ahad Saaz, Maot Se Agay Soch Ke Aana Phir Jee Lena in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 117 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdul Ahad Saaz.