Kiya Yahan Dekhiye Kiya Wahan Dekhiye

کیا یہاں دیکھیے کیا وہاں دیکھیے

کیا یہاں دیکھیے کیا وہاں دیکھیے

آپ ہی آپ ہیں اب جہاں دیکھیے

گھر جلا دیکھیے وہ دھواں دیکھیے

آگ پہنچی کہاں سے کہاں دیکھیے

دیکھیے تا کمر زلف کا شعبدہ

الجھنیں بن گئیں داستاں دیکھیے

مجھ کو معلوم ہے آپ معصوم ہیں

جل گیا ہوگا یوں ہی مکاں دیکھیے

بجھ گئی شمع پروانے رخصت ہوئے

لٹ گیا شوق کا کارواں دیکھیے

عشق روز ازل سے متاع یقیں

حسن ہے آج بھی بد گماں دیکھیے

آئیے میرے دل میں بھی وقت غزل

ایک دریائے آتش رواں دیکھیے

حسن کی احتیاط حسیں دیکھ کر

عشق کا التہاب گراں دیکھیے

اس تماشے کا جب آپ کو شوق ہے

ہم جلاتے ہیں اپنا مکاں دیکھیے

عصمت دل ہے اور غم کا آتش کدہ

آگ بن جائے گی گلستاں دیکھیے

اشتیاق جبیں اپنا دیکھیں گے ہم

آپ ویرانئ آستاں دیکھیے

آپ کے سامنے اور تاب سخن

خوش بیاں کتنے ہیں بے زباں دیکھیے

طور ہی کی طرح جل نہ جائے کہیں

جلوہ باری سے پہلے مکاں دیکھیے

رمز و ایما غزل کی اگر جان ہیں

آپ طرزیؔ کا حسن بیاں دیکھیے

عبدالمنان طرزی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(381) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdul Mannan Tarzi, Kiya Yahan Dekhiye Kiya Wahan Dekhiye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdul Mannan Tarzi.