Dikhla Do Naqsh Paye Rasool Ameen Ko

دکھلا دو نقش پائے رسول امین کو

دکھلا دو نقش پائے رسول امین کو

تا مشق سجدہ ہو مرے لوح جبین کو

اے آہ دل جو جاوے تو عرش برین کو

کہیو سلام عیسیٰ گردوں نشین کو

بل بے شرار اشک کی گرمی کہ اب تلک

اک آگ لگ رہی ہے مری آستین کو

تھا میں کمین بوسہ میں بولے اسی لیے

اشراف منہ لگاتے نہیں ہیں کمین کو

جب میں ہنسوں گا آپ سے رو دیجئے گا نہ

پھر تم بہت ہو چھیڑتے اس کمترین کو

کہتی ہو کیا رقیب کو بھیجوں بتا صلاح

لعنت ہی بھیجئے گا یزید لعین کو

دیکھوں ہوں گر الف کو تو اے دل ہزار بار

کرتا ہوں یاد تیرے قد دل نشین کو

آوے نظر جو لام تو آوے خیال زلف

جب سین پڑھ کے دیکھوں ہوں دنداں مسین کو

کرتا ہوں تیری الفت دنداں میں سین سین

یاں تک کہ پہنچا ہوں میں دم واپسین کو

تبدیل بحر سے وہ غزل پڑھ بآب و تاب

احساںؔ خوشی ہو جس سے دل سامعین کو

عبدالرحمان احسان دہلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(285) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdul Rahman Ehsan Dehlvi, Dikhla Do Naqsh Paye Rasool Ameen Ko in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 39 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdul Rahman Ehsan Dehlvi.