Wo Shakhas Kiya Hai Mere Waaste Sunain Usse

وہ شخص کیا ہے مرے واسطے سنائیں اسے

وہ شخص کیا ہے مرے واسطے سنائیں اسے

ہوا میں میرے حوالے سے گنگنائیں اسے

اداس راتوں میں آوارہ گرد بنجارے

ہٹا لیں بانسری ہونٹوں سے اور گائیں اسے

وہ میرا دل ہے کوئی ریت کا گھروندا نہیں

کہ شوخ موجیں مٹائیں اسے بنائیں اسے

ہے دل میں درد کا لشکر پڑاؤ ڈالے ہوئے

ملے وہ جان غزل تو کہاں سجائیں اسے

غزل ہے نام فلک پر قیام ہے اس کا

کبھی فلک سے زمیں پر اتار لائیں اسے

بچھڑ گیا تو پلٹ کر کبھی نہ آئے گا

ہزار دشت و بیاباں میں دو صدائیں اسے

وہ دل کا درد سہی جان بن گیا ہے کمالؔ

ہم اپنی جان سے جائیں تو بھول جائیں اسے

عبداللہ کمال

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(509) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abdullah Kamal, Wo Shakhas Kiya Hai Mere Waaste Sunain Usse in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Birthday, Hope Urdu Poetry. Also there are 23 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Birthday, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abdullah Kamal.