Bethe Bethe Jane Kahan Hum Kho Jate Hain

بیٹھے بیٹھے جانے کہاں ہم کھو جاتے ہیں

بیٹھے بیٹھے جانے کہاں ہم کھو جاتے ہیں

کبھی کبھی تو ہم دیوانے ہو جاتے ہیں

ہنس پڑتے ہیں کچھ اپنی بے حالی پر ، پھر

رونا ہو تو اپنے حال پہ رو جاتے ہیں

کبھی اچانک امڈے چلے آتے ہیں آنسو

اور کچھ داغ جو اس دل پر ہیں ، دھو جاتے ہیں

اور تو ہم کو کیا لینا دینا ہے کسی سے

جاتے ہوے کوئی یاد دلوں میں سمو جاتے ہیں

جانے کہاں سے ظاہر ہو جاتے ہیں انساں

اور خدا معلوم کدھر کو کھو جاتے ہیں

اوروں کا سامان تو خیر اٹھتا بھی کہاں ہے

بوجھ مگر اپنے حصے کا ڈھو جاتے ہیں

آگ تھا تو ، اور راکھ ہوا جاتا ہے آخر

تیرے لیے ہنستے بھی رہے ، اب رو جاتے ہیں

لڑتے رہتے ہیں آنکھوں کے عقب میں کسی سے

اور تھک ہار کے آخر ہم بھی سو جاتے ہیں

یاد آتے ہیں دوست کبھی پھولوں کی طرح سے

کانٹا سا کوئی تار نفس میں پرو جاتے ہیں

یہ دیوانگی سہی نہیں جاتی ہے تم سے

کہتے ہو تو اور کسی کے ہو جاتے ہیں

ابراراحمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(566) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Ahmad, Bethe Bethe Jane Kahan Hum Kho Jate Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 93 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Ahmad.