Dil Main Kiya Tha Ju Kho Giya Hai Kahin

دل میں کیا تھا جو کھو گیا ہے کہیں

دل میں کیا تھا جو کھو گیا ہے کہیں

میرا نقصان ہو گیا ہے کہیں

وہ تری کھوج میں رہا اور پھر

غالباً تجھ کو رو گیا ہے کہیں

خواب جو نیند میں بھی تھا بیدار

آخر کار سو گیا ہے کہیں

ہار بانہوں کے ساتھ لایا تھا

اور کانٹے چبھو گیا ہے کہیں

یوں تہی دست و دل گرفتہ نہ تھا

کچھ نہ کچھ مجھ کو ہو گیا ہے کہیں

تیری آواز بھی نہیں سنتا

کیا مرا بخت سو گیا ہے کہیں

ابراراحمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(286) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Ahmad, Dil Main Kiya Tha Ju Kho Giya Hai Kahin in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 93 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Ahmad.