Marne Wala Hai Koi K Hai Marne Wala

مارنے والا ہے کوئی ، کہ ہے مرنے والا

مارنے والا ہے کوئی ، کہ ہے مرنے والا

اسی مٹی میں ہے آخر کو اترنے والا

جانے کس چیز کو کہتے ہیں مکافات عمل

اور کرتا ہے ، کوئی اور ہے بھرنے والا

ساحل مرگ ہے منزل سبھی تیراکوں کی

ڈوبنے والا بھی ہے ، پار اترنے والا

چشم و دل کام میں لاؤ کہ ابھی مہلت ہے

اور کچھ دن میں یہ ساماں ہے بکھرنے والا

خوف یوں تو ہیں بہت راہ وفا میں لیکن

ڈٹ بھی جاتا ہے کسی موڑ پہ ڈرنے والا

تہ کرو بستر شب ، موند لو خوابوں بھری آنکھ

دل کی لو گل کرو ، سورج ہے ابھرنے والا

خود گزر جاؤں کہیں جاں سے ، یہ طے ہے لیکن

جان لے ، میں ترے ہاتھوں نہیں مرنے والا

ابراراحمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(489) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abrar Ahmad, Marne Wala Hai Koi K Hai Marne Wala in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 93 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abrar Ahmad.