Kiyon Malamat Iss Qadar Karte Ho Behasil Hai Yeh

کیوں ملامت اس قدر کرتے ہو بے حاصل ہے یہ

کیوں ملامت اس قدر کرتے ہو بے حاصل ہے یہ

لگ چکا اب چھوٹنا مشکل ہے اس کا دل ہے یہ

بے قراری سیں نہ کر ظالم ہمارے دل کوں منع

کیوں نہ تڑپے خاک و خوں میں اس قدر بسمل ہے یہ

عشق کوں مجنوں کے افلاطوں سمجھ سکتا نہیں

گو کہ سمجھاوے پہ سمجھے گا نہیں عاقل ہے یہ

کون سمجھاوے مرے دل کوں کوئی منصف نہیں

غیر حق کو چاہتا ہے کیوں ایتا باطل ہے یہ

کون ہے انساں کا کوئی دوست ایسا جو کہے

موت اس کی فکر میں لاگی ہے اور غافل ہے یہ

عاشقی کے فن میں ہے دل سیں جھگڑنا بے حساب

کچھ نہیں باقی رکھا اس علم میں فاضل ہے یہ

ہم تو کہتے تھے کہ پھر پانے کے نہیں جانے نہ دو

اب گئے پر آبروؔ پھر پائیے مشکل ہے یہ

نجم الدین شاہ مبارک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(573) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abroo Shah Mubarak, Kiyon Malamat Iss Qadar Karte Ho Behasil Hai Yeh in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 45 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abroo Shah Mubarak.