Na Pavee Chaal Tere Ki Piyare Yeh Dhalak Darya

نہ پاوے چال تیرے کی پیارے یہ ڈھلک دریا

نہ پاوے چال تیرے کی پیارے یہ ڈھلک دریا

چلا جاوے اگرچہ رووتا محشر تلک دریا

کہاں ایسا مبکی ہو کہ جاوے تا فلک دریا

نہیں ہم چشم میرے اشک کا مارے ہے جھک دریا

ہوا ہے چشم حیرت دیکھ تیری آب رفتاری

کنارے نہیں رہا ہے کھول ان دونوں پلک دریا

بھر آوے آب حسرت اس کے منہ میں جب لہر آوے

اگر دیکھے ترے ان نرم گالوں کے تھلک دریا

نہیں ہیں یہ حباب آتے ہیں جو نظروں میں مردم کی

جلن مجھ اشک کی سیں دل میں رکھتا ہے پھلک دریا

اگر ہو کوہ تو ریلے سیں اس لشکر کے چل جاوے

کہاں سکتا ہے مجھ انجھواں کی فوجاں سیں اٹک دریا

اثر کرنے کا نہیں سنگیں دلاں میں روونا ہرگز

کرارے سخت ہیں بے جا رہا ہے سر پٹک دریا

یقیں آیا کیا جب اس کے تئیں پانی سیں بھی پتلا

ہمارے اشک کی گرمی میں کچھ رکھتا تھا شک دریا

نہیں ممکن ہمارے دل کی آتش کا بجھا سکنا

کرے گر ابر طوفاں خیز کوں آ کر کمک دریا

نہ ہووے آبروؔ خانہ خرابی کیوں کہ مردم کی

کیا انجھواں میں میرے اب سما سیں تا سمک دریا

نجم الدین شاہ مبارک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(484) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abroo Shah Mubarak, Na Pavee Chaal Tere Ki Piyare Yeh Dhalak Darya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 45 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abroo Shah Mubarak.