Teera Rangoon K Hawa Haq Main Yeh Tap Karna Dawa

تیرہ رنگوں کے ہوا حق میں یہ تپ کرنا دوا

تیرہ رنگوں کے ہوا حق میں یہ تپ کرنا دوا

تیرگی جاتی رہی چہرے کی اور اپچی صفا

کیا سبب تیرے بدن کے گرم ہونے کا سجن

عاشقوں میں کون جلتا تھا گلے کس کے لگا

تو گلے کس کے لگے لیکن کنھی بے رحم نے

گرم دیکھا ہوئے گا تیرے تئیں انکھیاں ملا

بو الہوس ناپاک کی ازبسکہ بھاری ہے نظر

پردۂ عصمت میں تو اپنے تئیں اس سیں چھپا

اشک گرم و آہ سرد عاشق کے تئیں وسواس کر

خوب ہے پرہیز جب ہو مختلف آب و ہوا

گرم خوئی سیں پشیماں ہو کے ٹک لاؤ عرق

تپ کی حالت میں پسینا آؤنا ہو ہے بھلا

دل مرا تعویذ کے جوں لے کے اپنے پاس رکھ

تو طفیل حضرت عاشق کے ہو تجھ کوں شفا

ترش گوئی چھوڑ دے اور تلخ گوئی ترک کر

اور کھانا جو کہ ہو خوش کا تری سو کر غذا

بو علیؔ ہے نبض دانی میں بتاں کی آبروؔ

اس کا اس فن میں جو نسخہ ہے سو ہے اک کیمیا

نجم الدین شاہ مبارک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(297) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abroo Shah Mubarak, Teera Rangoon K Hawa Haq Main Yeh Tap Karna Dawa in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 45 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abroo Shah Mubarak.