Zameen Ne Kar Diya Hai Iss Tarhaan Raigaan Mujh Ko

زمیں نے کر دیا اس طرح رائیگاں مجھ کو

زمیں نے کر دیا اس طرح رائیگاں مجھ کو

نظر نہ آیا کبھی درد اور دھواں مجھ کو

تلاش کرتا ہے اک دوسرا جہاں مجھ کو

ادھورا لگتا ہے یہ جان کا زیاں مجھ کو

بچھے ہوئے ہیں تسلسل سے جلتے بجھتے چراغ

ہجوم لالہ و گل لے گیا کہاں مجھ کو

بھٹک رہے ہیں نظر میں نقوش گرد و باد

جگا کے چھوڑ گئے پائے رفتگاں مجھ کو

خود اپنی لوح تمنا پہ کھل کے دیکھوں گا

کسی کے جبر نے لکھا تھا رائیگاں مجھ کو

یہ کس کے اذن و رضا سے بہک رہے ہیں بدن

فریب رنگ نہ دے پایا یہ جہاں مجھ کو

سوائے‌‌ حزن و ہزیمت جگہ نہیں دل میں

اگر وہ پھیر بھی دے لشکر و نشاں مجھ کو

کسی کے بس میں نہیں ہے کشاد قلب و نگاہ

ملا تھا اپنی ہی قسمت کا سائباں مجھ کو

ہٹے یہ غازۂ شب رنگ تو اسے دیکھوں

پسند ہی نہیں آئینہ درمیاں مجھ کو

تمام بار الم دفعتاً گرا سر سے

یہ راستے میں ملا کون ناگہاں مجھ کو

ابوالحسنات حقی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1120) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Abul Hasanat Haqqi, Zameen Ne Kar Diya Hai Iss Tarhaan Raigaan Mujh Ko in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Abul Hasanat Haqqi.