Rah E Khizaan Mian Talash E Bahar Karte Rahee

رہ خزاں میں تلاش بہار کرتے رہے

رہ خزاں میں تلاش بہار کرتے رہے

وہ ایک طرفہ سہی تم سے پیار کرتے رہے

ہے کیا تماشا ادھر رنجشیں ہی بڑھتی رہیں

تعلقات ہمیں استوار کرتے رہے

گزر گئی جو گھڑی لوٹ کر نہ آئی کبھی

تلاش شام و سحر بار بار کرتے رہے

تمہاری چاہ میں جتنے بھی زخم ہم کو ملے

محبتوں میں ہم ان کا شمار کرتے رہے

تری انا پہ ہمیں اختیار ہی کب تھا

تمام عمر ترا انتظار کرتے رہے

عدیلؔ لوگ گھروں کو سجائے بیٹھے ہیں

فروغ حسن فقط برگ و بار کرتے رہے

عدیل زیدی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(820) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Adeel Zaidi, Rah E Khizaan Mian Talash E Bahar Karte Rahee in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 28 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Adeel Zaidi.