Tere Husn Nazar Ka Yeh Bhi Aik Aijaz Hai Saqi

ترے حسن نظر کا یہ بھی اک اعجاز ہے ساقی

ترے حسن نظر کا یہ بھی اک اعجاز ہے ساقی

کہ ہر مے کش زمیں پر آسماں پرواز ہے ساقی

خیال اتنا رہے بس اپنے ساغر کی پلانے میں

ترا انجام ہے ساقی مرا آغاز ہے ساقی

کہیں باہم دگر ٹکرا نہ جائیں ساغر و مینا

مئے سرجوش اس دم مائل پرواز ہے ساقی

جبین شوق سجدہ کر کہاں کا پاس رسوائی

خوشا وقتے کہ سرگرم خرام ناز ہے ساقی

ادھر بھی اک نظر او سب کی جانب دیکھنے والے

کہ اک رند خراباتی نظر انداز ہے ساقی

کریں توبہ تو دل بے چین اگر پی لیں تو رسوائی

عجب الجھن میں اپنی مے کشی کا راز ہے ساقی

شراب ارغوانی بھی پیوں میں خود تو پانی ہے

پلائے تو جو پانی بادۂ شیراز ہے ساقی

پس توبہ مجھے پینے میں آخر کیوں تامل ہو

بحمداللہ در توبہ ابھی تک باز ہے ساقی

وہ کیوں جانے لگا دیر و حرم کی ٹھوکریں کھانے

ترے افقرؔ کو تیرے میکدے پر ناز ہے ساقی

افقر موہانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(863) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Afqar Mohani, Tere Husn Nazar Ka Yeh Bhi Aik Aijaz Hai Saqi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Afqar Mohani.