Yun Khabar Kisse Thi Meri Teri Mukhbari Se Pehle

یوں خبر کسے تھی میری تری مخبری سے پہلے

یوں خبر کسے تھی میری تری مخبری سے پہلے

میں مسرتوں میں گم تھا تری دوستی سے پہلے

ترے حسن نے جگایا میرے عشق بے بہا کو

تری جستجو کہاں تھی مجھے شاعری سے پہلے

تو شریک زندگی ہے میں ہوں غم گسار تیرا

تیرا غم رہا ہے شامل میری ہر خوشی سے پہلے

دے اگر مجھے اجازت جو مرا ضمیر مجھ کو

میں تجھے خدا بنا لوں تری بندگی سے پہلے

ترے حسن کی کہانی مرے عشق کا فسانہ

بہت عام ہو چکا ہے غم عاشقی سے پہلے

تجھے رہنما بنا کر مجھے مل گئی ہے منزل

میں بہت بھٹک رہا تھا تری رہبری سے پہلے

کہو میر کارواں سے مجھے اس طرح نہ دیکھے

میں بڑا فراخ دل تھا کبھی دل لگی سے پہلے

یہ متاع رنج و غم اور شب ہجر کا یہ عالمؔ

تھا کہاں مرا مقدر تری بے رخی سے پہلے

افروز عالم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(352) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Afroz Alam, Yun Khabar Kisse Thi Meri Teri Mukhbari Se Pehle in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 17 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Afroz Alam.