Koi Achi Si Ghazal Kanoon Main Mere Ghool Dey

کوئی اچھی سی غزل کانوں میں میرے گھول دے

کوئی اچھی سی غزل کانوں میں میرے گھول دے

قید تنہائی میں ہوں میں مجھ کو آ کر کھول دے

یہ تناؤ جسم کا بڑھنے نہیں دے گا تجھے

چست پیراہن میں تو اپنے ذرا سا جھول دے

ایک لڑکی جل رہی ہے چلچلاتی دھوپ میں

کوئی بادل آ کے اس پر اپنی چھتری کھول دے

راہ تکتے جسم کی مجلس میں صدیاں ہو گئیں

جھانک کر اندھے کنوئیں میں اب تو کوئی بول دے

میں خریدار وفا ہوں تو گرفتار وفا

میری بانہوں میں تھرکتا جسم اپنا تول دے

دیر تک بنجارہ کل کوئی صدا دیتا رہا

کون ہے بازار میں جو جنس دل کا مول دے

جانے کب سے فیصلہ قسمت کا سننے کے لئے

منتظر بیٹھا ہوں میں تو اپنی مٹھی کھول دے

شعر اچھے ہوں تو بے گائے بھی مل جاتی ہے داد

تو خدارا لحن کے ہاتھوں میں مت کشکول دے

آفتاب شمسی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(591) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aftab Shamsi, Koi Achi Si Ghazal Kanoon Main Mere Ghool Dey in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 23 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aftab Shamsi.