Tu Phir Wo Ishq Pey Naqt O Nazar Baraye Farokhat

تو پھر وہ عشق یہ نقد و نظر برائے فروخت

تو پھر وہ عشق یہ نقد و نظر برائے فروخت

سخن برائے ہنر ہے ہنر برائے فروخت

عیاں کیا ہے ترا راز فی سبیل اللہ

خبر نہ تھی کہ ہے یہ بھی خبر برائے فروخت

میں قافلے سے بچھڑ کر بھلا کہاں جاؤں

سجائے بیٹھا ہوں زاد سفر برائے فروخت

پرندے لڑ ہی پڑے جائیداد پر آخر

شجر پہ لکھا ہوا ہے شجر برائے فروخت

میں پہلے کوفہ گیا اس کے بعد مصر گیا

ادھر برائے شہادت ادھر برائے فروخت

ذرا یہ دوسرا مصرع درست فرمائیں

مرے مکان پہ لکھا ہے گھر برائے فروخت

افضل خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(917) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Afzal Khan, Tu Phir Wo Ishq Pey Naqt O Nazar Baraye Farokhat in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 47 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Afzal Khan.