Main Bhi Kiya Zabt Azmata Hoon

میں بھی کیا ضبط آزماتا ہوں

میں بھی کیا ضبط آزماتا ہوں

توبہ کرتا ہوں بھول جاتا ہوں

غم سا رہتا ہوں تجھ سے دوری میں

اور قربت میں کھو سا جاتا ہوں

اپنی ہستی کی عظمتیں اکثر

انکساری سے جھک کے پاتا ہوں

کیوں مقید ہوں ذات میں اپنی

جبکہ دنیا سے دل لگاتا ہوں

اس کی زلفوں کو اب کے سلجھا کر

خود کو الجھا ہوا سا پاتا ہوں

جانے والے کو یہ نہیں معلوم

میں تصور میں اس کو لاتا ہوں

غم گساری میں دوست کی عادلؔ

رنج سہتا ہوں مسکراتا ہوں

احمد عادل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(781) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmad Adil, Main Bhi Kiya Zabt Azmata Hoon in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmad Adil.