Qalam Dil Main Doboya Ja Raha Hai

قلم دل میں ڈبویا جا رہا ہے

قلم دل میں ڈبویا جا رہا ہے

نیا منشور لکھا جا رہا ہے

میں کشتی میں اکیلا تو نہیں ہوں

مرے ہم راہ دریا جا رہا ہے

سلامی کو جھکے جاتے ہیں اشجار

ہوا کا ایک جھونکا جا رہا ہے

مسافر ہی مسافر ہر طرف ہیں

مگر ہر شخص تنہا جا رہا ہے

میں اک انساں ہوں یا سارا جہاں ہوں

بگولہ ہے کہ صحرا جا رہا ہے

ندیمؔ اب آمد آمد ہے سحر کی

ستاروں کو بجھایا جا رہا ہے

احمد ندیم قاسمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(468) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmad Nadeem Qasmi, Qalam Dil Main Doboya Ja Raha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 135 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmad Nadeem Qasmi.