Khawab Ka Azan Tha Tabeer Ijazat Thi Mujhe

خواب کا اذن تھا تعبیر اجازت تھی مجھے

خواب کا اذن تھا تعبیر اجازت تھی مجھے

وہ سمے ایسا تھا مرنے میں سہولت تھی مجھے

ایک بے برگ شجر دھند میں لپٹا ہوا تھا

شاخ پر بیٹھی دعاؤں کی ضرورت تھی مجھے

رات مسجد میں اندھیرا تو بہت تھا لیکن

یاد بھولی سی کوئی راہ عبادت تھی مجھے

اے مری جاں وہی غالبؔ کی سی حالت تھی مری

تیرے جانے کی گھڑی تھی کہ قیامت تھی مجھے

داستاں گو نے دکھا دی تھی مجھے شہزادی

اور پھر خواب میں چلنے کی بھی عادت تھی مجھے

احمد عطا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(917) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Atta, Khawab Ka Azan Tha Tabeer Ijazat Thi Mujhe in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Atta.