Raat Ke Pichlay Pehar Ronay Ke Aadi Roye

رات کے پچھلے پہر رونے کے عادی روئے

رات کے پچھلے پہر رونے کے عادی روئے

آپ آئے بھی مگر رونے کے عادی روئے

ان کے آ جانے سے کچھ تھم سے گئے تھے آنسو

ان کے جاتے ہی مگر رونے کے عادی روئے

ہائے پابندیٔ آداب تری محفل کی

کہ سر راہ گزر رونے کے عادی روئے

ایک تقریب تبسم تھی بہاراں لیکن

پھر بھی آنکھیں ہوئیں تر رونے کے عادی روئے

درد مندوں کو کہیں بھی تو قرار آ نہ سکا

کوئی صحرا ہو کہ گھر رونے کے عادی روئے

اے فرازؔ ایسے میں برسات کٹے گی کیوں کر

گر یوں ہی شام و سحر رونے کے عادی روئے

احمد فراز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(3588) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Faraz, Raat Ke Pichlay Pehar Ronay Ke Aadi Roye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 154 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Faraz.