Jis Raah Se Bhi Guzar Gaye Hum

جس راہ سے بھی گزر گئے ہم

جس راہ سے بھی گزر گئے ہم

ہر دل کو گداز کر گئے ہم

جلوے تھے کسی کے کار فرما

ہر نقش میں رنگ بھر گئے ہم

کیا جانیے کیا تھا اس نظر میں

الجھے تو سنور سنور گئے ہم

ہم بھانپ گئے تھے رنگ محفل

کہنے کو تو بے خبر گئے ہم

ہر دل تھا اداسیوں کا معبد

ہر گام ٹھہر ٹھہر گئے ہم

بے مہریٔ دوست تلخی زیست

کس کس سے نباہ کر گئے ہم

امید وفا پہ جینے والو

امید وفا میں مر گئے ہم

احمد راہی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(613) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Rahi, Jis Raah Se Bhi Guzar Gaye Hum in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Rahi.