Mehfil Mehfil Sannate Hain

محفل محفل سناٹے ہیں

محفل محفل سناٹے ہیں

درد کی گونج پہ کان دھرے ہیں

دل تھا شور تھا ہنگامے تھے

یارو ہم بھی تم جیسے ہیں

موج ہوا میں آگ بھری ہے

بہتے دریا کھول اٹھے ہیں

ارمانوں کے نرم شگوفے

شاخوں کے ہمراہ جلے ہیں

یہ جو ڈھیر ہیں یہ جو کھنڈر ہیں

ماضی کی گلیاں کوچے ہیں

جن کو دیکھنا بس میں نہیں تھا

ایسے بھی منظر دیکھے ہیں

کون دلوں پر دستک دے گا

یادوں نے دم سادھ لیے ہیں

احمد راہی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(315) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Rahi, Mehfil Mehfil Sannate Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Rahi.