Ishq Main Aaise Payidari Hai

عشق میں ایسی پائیداری ہے

عشق میں ایسی پائیداری ہے

تیری لغزش بھی ہم کو پیاری ہے

اس کا منہ موڑنا قیامت تھا

دل تڑپتا ہے زخم کاری ہے

تیرا کردار تو ہے معمولی

اور دستار کتنی بھاری ہے

آج دن بھر اداس اداس رہا

تم نے کیسے نظر اتاری ہے

زندگی کھیل ہے ڈرامے کا

ہر کھلاڑی پہ ذمہ داری ہے

کوئی اپنا نہیں لگا مجھ کو

آشنا سب ہیں سب سے یاری ہے

سربلندی عطا کرے گی تمہیں

یہ جو فطرت میں انکساری ہے

اس کا جنت سے واسطہ ہی نہیں

حسن اخلاق سے وہ عاری ہے

کھڑکیاں کھول دو ذرا اعجازؔ

اس نے شیشے پہ چونچ ماری ہے

اعجاز اسد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(919) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aijaz Asad, Ishq Main Aaise Payidari Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 11 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aijaz Asad.