Ainuddin Azim Poetry, Ainuddin Azim Shayari

عین الدین عازم - Ainuddin Azim

مشہور شاعر عین الدین عازم کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

سرخ رو سب کو سر مقتل نظر آنے لگے

عین الدین عازم

ذہن پر جب درد خاموشی کی چادر تانتا ہے

عین الدین عازم

آواز کے سوداگروں میں اتنی فن کاری تو ہے

عین الدین عازم

اب جنوں کے رت جگے خرد میں آ گئے

عین الدین عازم

کیا کروں ظرف شناسائی کو

عین الدین عازم

لامکاں سے بھی پرے خود سے ملاقات کریں

عین الدین عازم

جو میں نے کہہ دیا اس سے مکرنے والا نہیں

عین الدین عازم

تہی دامن، برہنہ پا روانہ ہو گیا ہوں

عین الدین عازم

مجھی میں جیتا ہے سورج تمام ہونے تک

عین الدین عازم

میں نے جب حد سے گزرنے کا ارادہ کر لیا

عین الدین عازم

درد تیرا مرے سینے سے نکالا نہ گیا

عین الدین عازم

پاؤں پھنسے میں ہاتھ چھڑانے آیا تھا

عین الدین عازم