Din Guzra Or Shaam Dhali Phir Wehshaat Ley Kar Aayi Raat

دن گزرا اور شام ڈھلی پھر وحشت لے کر آئی رات

دن گزرا اور شام ڈھلی پھر وحشت لے کر آئی رات

جب بھی اس کا ہجر منایا ہم نے وہ کہلائی رات

اس کو رونے سے پہلے کچھ ہم نے یوں تیاری کی

کونے میں تنہائی رکھی کمرے میں پھیلائی رات

تو نے کیسے سوچ لیا کہ تیرے تحفے بھول گئے

دل نے تیرے غم کو پہنا آنکھوں کو پہنائی رات

ساون آیا لیکن سوکھی احساسوں کی ہریالی

بنجر دل میں آنسو بوئے اوپر سے برسائی رات

کوئی بھی موسم آیا ہو ہم پر تو برسات ہوئی

اس کی یادوں نے جو گھیرا دوپہروں پر چھائی رات

اس پل جیسے بول پڑا ہو دیواروں کا سناٹا

اس کی راہیں تکتے تکتے جیسے ہو اکتائی رات

کتنے ہی منظر شامل ہیں میری سونی آنکھوں میں

چپ کے سے آ کے کرتی ہے پلکوں کی ترپائی رات

چاہت کی یہ ریشمی گرہیں اور پلکوں پر نیند کا بوجھ

یادوں سے جو بچ نکلے تو خوابوں نے الجھائی رات

عائشہ ایوب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(514) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aisha Ayyub, Din Guzra Or Shaam Dhali Phir Wehshaat Ley Kar Aayi Raat in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 15 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aisha Ayyub.