Hum Apne Ap Main Rehtay Hain Dam Main Dam Jaisay

ہم اپنے آپ میں رہتے ہیں دم میں دم جیسے

ہم اپنے آپ میں رہتے ہیں دم میں دم جیسے

ہمارے ساتھ ہوں دو چار بھی جو ہم جیسے

کسے دماغ جنوں کی مزاج پرسی کا

سنے گا کون گزرتی ہے شام غم جیسے

بھلا ہوا کہ ترا نقش پا نظر آیا

خرد کو راستہ سمجھے ہوئے تھے ہم جیسے

مری مثال تو ایسی ہے جیسے خواب کوئی

مرا وجود سمجھ لیجئے عدم جیسے

اب آپ خود ہی بتائیں یہ زندگی کیا ہے

کرم بھی اس نے کئے ہیں مگر ستم جیسے

اجمل سراج

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(851) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ajmal Siraj, Hum Apne Ap Main Rehtay Hain Dam Main Dam Jaisay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 19 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ajmal Siraj.