Akbar Allahabadi Poetry, Akbar Allahabadi Shayari

اکبر الہ آبادی - Akbar Allahabadi

1846 - 1921 احمد آباد

Ghazals of Akbar Allahabadi - Urdu Ghazal Poetry

اکبر الہ آبادی کی غزلیں

آنکھیں مجھے تلووں سے وہ ملنے نہیں دیتے

Aankhen Mujhe Talwon Se Wo Milne Nahi Dete

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

اک بوسہ دیجیے مرا ایمان لیجیے

Ek Bosa Dejiye Mera Imaan Lijiye

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

اپنے پہلو سے وہ غیروں کو اٹھا ہی نہ سکے

Apne Pehlu Se Wo Gairon Ko Utha Hi Na Sake

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

ہوں میں پروانہ مگر شمع تو ہو، رات تو ہو

Hoon Main Parwana Magar Shamaa Tu Ho Rat Tu Ho

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

درد تو موجود ہے دل میں دوا ہو یا نہ ہو

Dard To Maujood Hai Dil Mein Dawa Ho Ya Na Ho

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

میری تقدیر موافق نہ تھی تدبیر کے ساتھ

Meri Taqdeer Muwafiq Na Thi Tadbeer Ke Sath

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

ہر اک یہ کہتا ہے اب کار دیں تو کچھ بھی نہیں

Har Ek Ye Kehta Hai Ab Kaar De To Kuch Bhi Nahi

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

سانس لیتے ہوئے بھی ڈرتا ہوں

Sans Lete Hoe Bhi Darta Hoon

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

دنیا میں ہوں دنیا کا طلبگار نہیں ہوں

Duniya Mein Hoon Duniya Ka Talabgar Nahi Hoon

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

دل مایوس میں وہ شورشیں برپا نہیں ہوتیں

Dil Mayoon Mein Wo Shorshe Barpa Nahi Hoti

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

چرخ سے کچھ امید تھی ہی نہیں

Charkh Se Kuch Umeed Thi Hi Nahi

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

مل گیا شرع سے شراب کا رنگ

Mil Gaya Shara Se Sharab Ka Rang

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

کیا جانیے سید تھے حق آگاہ کہاں تک

Kia Janiye Sayyed The Haq Aagah Kaha Tak

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

یوں مری طبع سے ہوتے ہیں معانی پیدا

Yun Meri Tabaa Se Hote Hain Maani Paeda

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

یہ سست ہے تو پھر کیا وہ تیز ہے تو پھر کیا

Ye Sust Hai To Phir Kia Wo Taiz Hai To Phir Kia

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

ہوائے شب بھی ہے عنبر افشاں عروج بھی ہے مہ مبیں کا

Howa E Shab Hai Anbar E Afshaan Urooj Bhi Hai May Mubeen Ka

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

غمزہ نہیں ہوتا کہ اشارا نہیں ہوتا

Ghamzadah Nahi Hota Ke Ishara Nahi Hota

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

عشق بت میں کفر کا مجھ کو ادب کرنا پڑا

Ishq But Mein Kufar Ka Mujh Ko Adab Karna Pada

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

طریق عشق میں مجھ کو کوئی کامل نہیں ملتا

Tareeq E Ishq Mein Mujh Ko Koi Kamil Nahi Milta

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

دل مرا جس سے بہلتا کوئی ایسا نہ ملا

Dil Mera Jis Se Bahlata Koi Aisa Na Mila

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

جو تمہارے لب جاں بخش کا شیدا ہوگا

Jo Tumhare Lab E Jaan Bakhsh Ka Shaeda Hoga

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

جہاں میں حال مرا اس قدر زبون ہوا

Jahan Main Haal Mera Is Qadar Zaboon Hova

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

جلوہ عیاں ہے قدرت پروردگار کا

Jalwa Ayaan Ha Qudrat E Parwardigar Ki

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

جب یاس ہوئی تو آہوں نے سینے سے نکلنا چھوڑ دیا

Jab Yaas Oe To Aahon Ne Seene Se Nikalna Chod Diya

(Akbar Allahabadi) اکبر الہ آبادی

Urdu Ghazals Poetry by Akbar Allahabadi. Best collection of Ghazal Poetry. Read the Ghazal Shayari of Famous Urdu poet. Akbar Allahabadi Ki Ghazal Shayari. There are 24 Ghazal poetry by the poet added on the site. You can read Love Ghazals, Sad Ghazals, Sufi Ghazals, Naat Ghazals, Hamd and Marsia of the poet on UrduPoint.