Guzarna Hai Jee Se Guzar Jaiye

گزرنا ہے جی سے گزر جائیے

گزرنا ہے جی سے گزر جائیے

لیے دیدۂ تر کدھر جائیے

کھلے دل سے ملتا نہیں اب کوئی

اسے بھولنے کس کے گھر جائیے

سبک رو ہے موج غم دل ابھی

ابھی وقت ہے پار اتر جائیے

الٹ تو دیا پردۂ شب مگر

نہیں سوجھتا اب کدھر جائیے

علاج غم دل نہ صحرا نہ گھر

وہی ہو کا عالم جدھر جائیے

اسی موڑ پر ہم ہوئے تھے جدا

ملے ہیں تو دم بھر ٹھہر جائیے

کٹھن ہیں بہت ہجر کے مرحلے

تقاضا ہے ہنس کر گزر جائیے

اب اس در کی اخترؔ ہوا اور ہے

لیے اپنے شام و سحر جائیے

اختر سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(386) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed Khan, Guzarna Hai Jee Se Guzar Jaiye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed Khan.