Pehrti Hai Zindagi Janaza Bah Dosh

پھرتی ہے زندگی جنازہ بہ دوش

پھرتی ہے زندگی جنازہ بہ دوش

بت بھی چپ ہیں خدا بھی ہے خاموش

کوئی میری طرح جئے تو سہی

زندگی در گلو اجل بر دوش

دیدنی تھی یہ کائنات بہت

ہم بھی کچھ دن رہے خراب ہوش

گھر سے طوف حرم کو نکلا تھا

راہ میں تھی دکان بادہ فروش

اک تعلق قدم کو راہ سے ہے

میں نہ آوارہ ہوں نہ خانہ بدوش

ہم سے غافل نہیں ہیں اہل ستم

اک ذرا تھک کے ہو گئے ہیں خموش

جی میں ہے کوئی آرزو کیجے

یعنی باقی ہے سر میں مستی ہوش

ہے یہ دنیا بہت وسیع تو ہو

میں ہوں اور تیرا حلقۂ آغوش

دل کو روتے کہاں تلک اخترؔ

آخر کار ہو گئے خاموش

اختر سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(519) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed Khan, Pehrti Hai Zindagi Janaza Bah Dosh in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed Khan.