Sir Main Sodaye Wafa Rakhtay Hain

سر میں سودائے وفا رکھتے ہیں

سر میں سودائے وفا رکھتے ہیں

ہم بھی اس عہد میں کیا رکھتے ہیں

واسطہ جس کا ترے غم سے نہ ہو

ہم وہ ہر کام اٹھا رکھتے ہیں

بن کھلی ایک کلی پہلو میں

ہم بھی اے باد صبا رکھتے ہیں

بت کدہ والو تمہیں کچھ بولو

وہ تو چپ ہیں جو خدا رکھتے ہیں

غیرت عشق کوئی راہ نکال

ظلم وہ سب پہ روا رکھتے ہیں

کیا سلیقہ ہے ستم گاری کا

رخ پہ دامان حیا رکھتے ہیں

چارہ سازان زمانہ اے دل

زہر دیتے ہیں دوا رکھتے ہیں

نغمۂ شوق ہو یا نالۂ دل

درد مندانہ صدا رکھتے ہیں

دل کی تعمیر کو ڈھا کر اخترؔ

وہ محبت کی بنا رکھتے ہیں

اختر سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(407) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed Khan, Sir Main Sodaye Wafa Rakhtay Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed Khan.