Yaqeen Hai Nah Guma Hai Zara Sambhal Ke Chalo

یقین ہے نہ گماں ہے ذرا سنبھل کے چلو

یقین ہے نہ گماں ہے ذرا سنبھل کے چلو

عجیب رنگ جہاں ہے ذرا سنبھل کے چلو

سلگتے خوابوں کی بستی ہے رہ گزار حیات

یہاں دھواں ہی دھواں ہے ذرا سنبھل کے چلو

روش روش ہے گزر گاہ نکہت برباد

کلی کلی نگراں ہے ذرا سنبھل کے چلو

جو زخم دے کے گئی ہے ابھی نسیم سحر

سکوت گل سے عیاں ہے ذرا سنبھل کے چلو

خرام ناز مبارک تمہیں مگر یہ دل

متاع شیشہ گراں ہے ذرا سنبھل کے چلو

سراغ‌ حشر نہ پا جائیں دیکھنے والے

ہجوم دیدہ وراں ہے ذرا سنبھل کے چلو

یہاں زمین بھی قدموں کے ساتھ چلتی ہے

یہ عالم گزراں ہے ذرا سنبھل کے چلو

اختر سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(491) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed Khan, Yaqeen Hai Nah Guma Hai Zara Sambhal Ke Chalo in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed Khan.