JooN Fouj K Maftooh Ho Zanjeer Main Aawey

جوں فوج کہ مفتوح ہو زنجیر میں آوے

جوں فوج کہ مفتوح ہو زنجیر میں آوے

الفاظ کا لشکر مری تحریر میں آوے

اک خاص عنایت ہے کہ دیتے نہیں مجھ کو

وہ درد کہ جو پنجۂ تدبیر میں آوے

یکسر رگ منصور کی ہمت سے پرے ہے

وہ علم کہ اک عرصۂ تقطیر میں آوے

جو چاہے بھرے میں نے مصور سے کہا تھا

کچھ رنگ محبت مری تصویر میں آوے

وہ بات خوشا دیتا ہے دل جس کی گواہی

یہ کیا کہ کہو اگلی اساطیر میں آوے

جو حکم تمہارا ہے وہ واجب ہے بلا شک

جو عرض ہماری ہے وہ تعزیر میں آوے

ہے گرچہ بہت میرے لیے خواب کی دنیا

کچھ اور مزہ خواب کی تعبیر میں آوے

جس پاس مداوا نہیں کچھ آب و ہوا کا

لازم ہے مرے حلقۂ تقریر میں آوے

ممکن نہیں آدم کے لیے شان خدائی

ہاں یوں کہ مگر آیۂ تطہیر میں آوے

اختر سعید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(591) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed, JooN Fouj K Maftooh Ho Zanjeer Main Aawey in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed.