Bujha Sa Rehta Hai Dil Jab Se Hain Watan Se Juda ( Radeef. . Noon )

بجھا سا رہتا ہے دل جب سے ہیں وطن سے جدا (ردیف .. ن)

بجھا سا رہتا ہے دل جب سے ہیں وطن سے جدا

وہ صحن باغ نہیں سیر ماہتاب نہیں

بسے ہوئے ہیں نگاہوں میں وہ حسیں کوچے

ہر ایک ذرہ جہاں کم ز آفتاب نہیں

وہ باغ و راغ کے دلچسپ و دل نشیں منظر

کہ جن کے ہوتے ہوئے خلد مثل خواب نہیں

وہ جوئبار رواں کا طرب فزا پانی

شراب سے نہیں کچھ کم اگر شراب نہیں

برنگ زلف پریشاں وہ موج ہائے رواں

کہ جن کی یاد میں راتوں کو فکر خواب نہیں

سما رہے ہیں نظر میں وہ مہوشان حرم

حرم میں جن کے ستارے بھی باریاب نہیں

وطن کا چھیڑ دیا کس نے تذکرہ اخترؔ

کہ چشم شوق کو پھر آرزوئے خواب نہیں

اختر شیرانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1272) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Sheerani, Bujha Sa Rehta Hai Dil Jab Se Hain Watan Se Juda ( Radeef. . Noon ) in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Sheerani.