Wada Is Mahro Ke Anay Ka

وعدہ اس ماہرو کے آنے کا

وعدہ اس ماہرو کے آنے کا

یہ نصیبہ سیاہ خانے کا

کہہ رہی ہے نگاہ دز دیدہ

رخ بدلنے کو ہے زمانے کا

ذرے ذرے میں بے حجاب ہیں وہ

جن کو دعوی ہے منہ چھپانے کا

حاصل عمر ہے شباب مگر

اک یہی وقت ہے گنوانے کا

چاندنی خامشی اور آخر شب

آ کہ ہے وقت دل لگانے کا

ہے قیامت ترے شباب کا رنگ

رنگ بدلے گا پھر زمانے کا

تیری آنکھوں کی ہو نہ ہو تقصیر

نام رسوا شراب خانے کا

رہ گئے بن کے ہم سراپا غم

یہ نتیجہ ہے دل لگانے کا

جس کا ہر لفظ ہے سراپا غم

میں ہوں عنوان اس فسانے کا

اس کی بدلی ہوئی نظر توبہ

یوں بدلتا ہے رخ زمانے کا

دیکھتے ہیں ہمیں وہ چھپ چھپ کر

پردہ رہ جائے منہ چھپانے کا

کر دیا خوگر ستم اخترؔ

ہم پہ احسان ہے زمانے کا

اختر شیرانی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1711) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Sheerani, Wada Is Mahro Ke Anay Ka in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 82 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Sheerani.