Aish To Aish Mujhe Ranj Bhi Mehnat Se Mila

عیش تو عیش مجھے رنج بھی محنت سے ملا

عیش تو عیش مجھے رنج بھی محنت سے ملا

آگہی ، تجربے ، خوش فہمیاں ، امید نئی

کیا سے کیا کچھ نہ مجھے ترکِ سکونت سے ملا

کتنا مکروہ لگا قیمتی ملبوس اس کا

ایک نادار سے جو شخص کراہت سے ملا

فکر و تحقیق و طلب اور عمل کو چھوڑیں

وہ دکھائیں کہ خدا جس کو عبادت سے ملا

دسترس میں جو نظر آیا تھا پہلے پہلے

وہ خزانہ مجھے برسوں کی ریاضت سے ملا

دیکھنا چھین بھی سکتا ہوں اسے آپ سے میں

تاجِ سلطانی اگر میری حمایت سے ملا

وہ جو مشکل سے لگا ہاتھ ، لگایا دل سے

کھو دیا میں نے بھی جاذب جو سہولت سے ملا

اکرم جاذب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(893) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akram Jazib, Aish To Aish Mujhe Ranj Bhi Mehnat Se Mila in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akram Jazib.