Ata Hai Nazar Our Hi Manzar Hai Koi Our

آتا ہے نظر اور ہی منظر ہے کوئی اور

آتا ہے نظر اور ہی منظر ہے کوئی اور

کیا محو تماشا مرے اندر ہے کوئی اور

تبدیل ہوئی کیسے ہر اک گھر کی وراثت

در پر ہے کوئی نام پس در ہے کوئی اور

نظارہ کہاں ایسا کسی دشت میں دیکھا

پاؤں تو کسی کے ہیں مگر سر ہے کوئی اور

الجھی ہے مگر تشنہ لبی تشنہ لبی سے

یہ بات الگ ہے کہ سمندر ہے کوئی اور

عالم خورشید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(464) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Alam Khurshid, Ata Hai Nazar Our Hi Manzar Hai Koi Our in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 71 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Alam Khurshid.