Nahin Hota

نہیں ہوتا

اثر ہم پر ذرا نہیں ہوتا

کوئی گر کارگر نہیں ہوتا

سر پہ ڈنڈوں کی بارشیں بھی ہوئیں

ہم سے پوچھو کہ کیا نہیں ہوتا

مرغ اکثر بنائے جاتے ہیں

آہ پھر بھی اثر نہیں ہوتا

ہم نے لڈو چرائے ہیں اکثر

جب کوئی دوسرا نہیں ہوتا

لکھنے پڑھنے سے بیر ہے ہم کو

پیار اس سے کبھی نہیں ہوتا

مار جب بے پناہ پڑتی ہے

تب کوئی ہم نوا نہیں ہوتا

دل پہ غم کی گھٹائیں چھائی ہیں

جب کہ چھٹی کا دن نہیں ہوتا

کھیلنے کودنے سے الفت ہے

کیوں کہ دنیا میں کیا نہیں ہوتا

گھر پہ ابا اسکول میں استاد

کون ہے جو برا نہیں ہوتا

الف محسن

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(410) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Nahin Hota by Alif Mohsin - Read Alif Mohsin's best Shayari Nahin Hota at UrduPoint. Here you can read the best poetry Nahin Hota of Alif Mohsin. Nahin Hota is the most famous poetry by Alif Mohsin. People love to read poetry by Alif Mohsin, and Nahin Hota by Alif Mohsin is best among the whole collection of poetry by Alif Mohsin.

Alif Mohsin is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Alif Mohsin. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Alif Mohsin. On this page, you can read Nahin Hota by Alif Mohsin. Nahin Hota is the best poetry by Alif Mohsin.

Read the Alif Mohsin's best poetry Nahin Hota here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Alif Mohsin's best Shayari, Nahin Hota of Alif Mohsin will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Alif Mohsin, regard it as the best poetry Nahin Hota of Alif Mohsin.

We recommend you read the most famous poetry, Nahin Hota of Alif Mohsin here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.