Nafs Nafs Izterab Sa Kuch

نفس نفس اضطراب سا کچھ

نفس نفس اضطراب سا کچھ

ہے زندگی یا عذاب سا کچھ

فریب کھاتی ہے پیاس اپنی

قدم قدم ہے سراب سا کچھ

نئی نئی گفتگو کا نشہ

بڑی پرانی شراب سا کچھ

کسی وسیلے تو رات گزرے

نہ نیند ہے اور نہ خواب سا کچھ

ہیں چشم گریاں کو غم ہزاروں

چلو کریں انتخاب سا کچھ

ان اچھے لوگوں میں واقعی کیا

کہیں نہیں ہے خراب سا کچھ

ورق ورق پڑھ لیا گیا وہ

تھا جس کا چہرہ کتاب سا کچھ

یہ راہ پر خار کچھ نہیں جب

چبھا ہو دل میں گلاب سا کچھ

نہ جانے کیوں خود اذیتی سے

مجھے نہیں اجتناب سا کچھ

امرؔ وہی شخص دل کا جو ہے

ذرا سا اچھا خراب سا کچھ

امردیپ سنگھ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(563) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Amardeep Singh, Nafs Nafs Izterab Sa Kuch in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Amardeep Singh.