Nishat Dard Ka Darya Utarne Wala Hai

نشاط درد کا دریا اترنے والا ہے

نشاط درد کا دریا اترنے والا ہے

میں اس سے اور وہ مجھ سے ابھرنے والا ہے

میں اس کی نرم نگاہی سے ہو گیا مایوس

وہ میری سادہ دلی سے مکرنے والا ہے

وہ میرے عشق میں دیوانہ وار پھرنے لگے

یہ معجزہ تو فقط فرض کرنے والا ہے

مرے خیال کی پرواز سے جو واقف ہے

وہ آشنا ہی مرے پر کترنے والا ہے

ابھی ابھی مرے کچھ دوست آنے والے ہیں

میں سوچتا تھا ہر اک زخم بھرنے والا ہے

فصیل جسم پہ کچھ نقش چھوڑ جائے گا

جو حادثہ مرے دل پر گزرنے والا ہے

بس اس خیال میں بگڑا رہا میں برسوں تک

اب ایک دن میں کوئی کیا سدھرنے والا ہے

وہ بن کے زیست مرے پاس آ گیا ہے امرؔ

یہ وقت میرے لئے عین مرنے والا ہے

امردیپ سنگھ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(455) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Amardeep Singh, Nishat Dard Ka Darya Utarne Wala Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Amardeep Singh.