Ik Larki K Rukh Per Kiya Bezari Hai

اک لڑکی کے رخ پر کیا بے زاری ہے

اک لڑکی کے رخ پر کیا بے زاری ہے

پھولوں کو بھی کھلنے میں دشواری ہے

عشق میں جب بھی کوئی شخص اجڑتا ہے

لگتا ہے اب اگلی میری باری ہے

اس سے پوچھو خوابوں کا اب کیا ہوگا

دن میں جس نے مجھ پر نیند اتاری ہے

مرشد بس میں خود سے نفرت کرتا ہوں

مرشد مجھ کو سوچنے کی بیماری ہے

ڈوب رہے ہیں لوگ سمندر میں عمارؔ

اس نے ان آنکھوں کی نقل اتاری ہے

عمار یاسر مگسی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(801) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ammar Yasir Magsi, Ik Larki K Rukh Per Kiya Bezari Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ammar Yasir Magsi.