Inhraf

انحراف

میں خواجہ سراؤں کے شہر میں پیدا ہوا

میں اپنی تکمیل کا لگان کس کس کو دوں

ماں آٹا گوندھ کر بھوکی سو گئی

اور میں نے مٹی گوندھ کر اپنے لیے ایک خدا بنا لیا

سجدہ میری پیشانی کا زخم ہے

مگر میرا مرہم سفر سقراط کے پیالے میں پڑا ہے

خدا کا بوسہ میرا پہناوا تھا

مجھے بے لباس کر کے کٹہرا پہنا دیا گیا

میری زبان نے جلتے کوئلے کی گواہی چکھی

اور منصف نے میری آواز اپنے ترازو سے چرا لی

میں کیا کروں دیواروں

دیمک کا رزق بن جاؤں

یا چوہوں کو اپنے بدن میں بل بنا لینے دوں

جو میری چھٹی حس کترتا چاہتے ہیں

انجم سلیمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(239) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Anjum Saleemi, Inhraf in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Anjum Saleemi.