Dewaar Per Likha Na Parho Or Khush Raho

دیوار پر لکھا نہ پڑھو اور خوش رہو

دیوار پر لکھا نہ پڑھو اور خوش رہو

کہتا ہے جو گجر نہ سنو اور خوش رہو

اپنائیت کا خواب تو دیکھو تمام عمر

بیگانگی کا زہر پیو اور خوش رہو

کانٹے جو دوستوں نے بکھیرے ہیں راہ میں

پلکوں سے اپنی آپ چنو اور خوش رہو

باتیں تمام ان کی سنو گوش ہوش سے

اپنی طرف سے کچھ نہ کہو اور خوش رہو

وہ کج ادا ہیں گر تو نہ شکوہ کرو کبھی

بہتر ہے زہر عشق پیو اور خوش رہو

شکوہ کیا زمانے کا تو اس نے یہ کہا

جس حال میں ہو زندہ رہو اور خوش رہو

انورؔ سدید حال اگر مہرباں نہیں

ماضی کو اپنے یاد کرو اور خوش رہو

انور سدید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(458) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Anwar Sadeed, Dewaar Per Likha Na Parho Or Khush Raho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Anwar Sadeed.