Sansoon Main Mill Gayi Teri Sansoon Ki Bass Thi

سانسوں میں مل گئی تری سانسوں کی باس تھی

سانسوں میں مل گئی تری سانسوں کی باس تھی

بہکی ہوئی نظر تھی کہ پھر بھی اداس تھی

بے شک شکست دل پہ وہ مبہوت رہ گیا

لیکن شکست دل میں بھی زندہ اک آس تھی

گر تو مرے حواس پہ چھایا ہوا نہ تھا

ہستی وہ کون تھی جو مرے دل کے پاس تھی

بارش سے آسمان کا چہرہ تو دھل گیا

دھرتی کے ہونٹ پر ابھی صدیوں کی پیاس تھی

کونپل نے آنکھ کھولی تو حیران رہ گئی

حد نظر تلک یہ زمیں بے لباس تھی

ہونٹوں پہ اک گلاب تھا تازہ کھلا ہوا

آنکھوں کے آئنوں میں تمنا اداس تھی

انورؔ سدید سوچتا رہتا ہوں ان دنوں

وہ کون تھا کہ جس کے لیے دل میں پیاس تھی

انور سدید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(485) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Anwar Sadeed, Sansoon Main Mill Gayi Teri Sansoon Ki Bass Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Anwar Sadeed.