Tujh Ko Tu Quwat Izhaar Zamane Se Milli

تجھ کو تو قوت اظہار زمانے سے ملی

تجھ کو تو قوت اظہار زمانے سے ملی

مجھ کو آزادہ روی خون جلانے سے ملی

قریۂ جاں کی طرح ان پہ اداسی تھی محیط

در و دیوار کو رونق ترے آنے سے ملی

یوں تسلی کو تو اک یاد بھی کافی تھی مگر

دل کو تسکین ترے لوٹ کے آنے سے ملی

میں خزاں دیدہ شجر کی طرح گمنام سا تھا

مجھ کو وقعت تری تصویر بنانے سے ملی

شاخ احساس پہ جو پھول کھلے ہیں ان کو

زندگی حسن کا ادراک بڑھانے سے ملی

جاگتی آنکھ سے جو خواب تھا دیکھا انورؔ

اس کی تعبیر مجھے دل کے جلانے سے ملی

انور سدید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(468) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Anwar Sadeed, Tujh Ko Tu Quwat Izhaar Zamane Se Milli in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Anwar Sadeed.