Zorr Se Aandhi Chali Tu Bujh Gaye Sare Chirag

زور سے آندھی چلی تو بجھ گئے سارے چراغ

زور سے آندھی چلی تو بجھ گئے سارے چراغ

گم ہوئے جاتے ہیں تاریکی میں منظر اور میں

ہاتھ سے بچوں کے نکلے میری جھولی میں گرے

بن گئے ہیں دوست یہ بچوں کے پتھر اور میں

پر نہیں لیکن میسر طاقت پرواز ہے

دیکھیے اڑتے فضاؤں میں کبوتر اور میں

اب طمانیت بہت محسوس ہوتی ہے مجھے

ہو گیا ہے ہم سخن نیلا سمندر اور میں

کیسے کیسے خوبرو چہرے تھے سب کے سامنے

محو حیرت ہو گیا ہے سارا دفتر اور میں

کوئی بھی پیچیدگی حائل نہیں انور سدیدؔ

زندگی ہے سامنے منظر بہ منظر اور میں

انور سدید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(451) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Anwar Sadeed, Zorr Se Aandhi Chali Tu Bujh Gaye Sare Chirag in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Anwar Sadeed.