Samme Hi Kkuch Aaisa Tha

سمے ہی کچھ ایسا تھا

سمے ہی کچھ ایسا تھا

(عارفہ شہزاد)

سفید بالوں

اور ہیرے کی کنی جیسی آنکھوں والوں کے دل

سونے کی ڈلی سے تراشے جاتے ہیں

وہ نہیں بولتے

مگر چار اطراف

چاندی جیسے اجلے لفظ

مسکرانے لگتےہیں

وہ سفید بادلوں میں

شفافیت کا رنگ بھر دیتے ہیں

آسمان کی نیلاہٹ

بھر لیتے ہیں آنکھوں میں

جذب کرلیتے ہیں سات رنگ

زندگی کےتجربے کی آنچ

ان کے چہرے پر دھواں نہیں بکھیرتی

وہ اپنا اجلا روپ ہتھیلی پر لیے پھرتے ہیں

اچھال دیتے ہیں سورج کی طرف

دودھیا کرنوں کا تھال

رات کے اندھیرے میں

ماہتاب چننے نکلتا ہے

ان کا روپہلا روپ

انھیں دیکھتے ہی

جنگل کے درختوں سے

چھنتی ہوئی روشنی

رقص کرنے لگتی ہے

مگرمیری آنکھیں

ٹٹولتی رہتی ہیں اندھیرا

میں نے ایک سفید بالوں والے کو

اوجھل ہوتے دیکھ لیا تھا!

عارفہ شہزاد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1173) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arifa Shahzad, Samme Hi Kkuch Aaisa Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 63 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arifa Shahzad.