Isse Tere Gham Ki Khabar Na Ho Tu Har Aik Gham Ko Chupaye Rakh

اسے تیرے غم کی خبر نہ ہو تو ہر ایک غم کو چھپائے رکھ

اسے تیرے غم کی خبر نہ ہو تو ہر ایک غم کو چھپائے رکھ

وہ ہری رتوں کا گلاب ہے اسے دھوپ رت سے بچائے رکھ

وہ جو ایک بار چلا گیا تو کبھی پلٹ کے نہ آئے گا

اسے روٹھ جانے سے روک لے یہ دلوں کا ربط بنائے رکھ

یہی چاہتوں کا اصول ہے کہ ہتھیلیوں پہ لہو سجا

اسے یاد رکھنے کی آرزو ہے تو اپنے دل کو بھلائے رکھ

کوئی شمع ہے کہ جو بجھ گئی تو نئے سرے سے جلا لیا

یہ چراغ دل کا چراغ ہے اسے آندھیوں سے بچائے رکھ

ارشد عبدالحمید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(358) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Abdul Hamid, Isse Tere Gham Ki Khabar Na Ho Tu Har Aik Gham Ko Chupaye Rakh in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Abdul Hamid.