Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag

ہیں تیغ ناز یار کے بسمل الگ الگ

ہیں تیغ ناز یار کے بسمل الگ الگ

سینے میں ہیں تپاں جگر و دل الگ الگ

قاتل تو رشک دیکھ ذرا اپنے کشتوں کا

مقتل میں بھی تڑپتے ہیں بسمل الگ الگ

کیا انتظام ہے مرے لیلیٰ جمال کا

مجنوں رواں ہیں سب پس محفل الگ الگ

دیکھو بشر میں صنعت خلاق روزگار

سب ایک ہیں مگر ہے شمائل الگ الگ

فرماتے ہیں ملاپ کا کرتا ہوں جب سوال

تو بات کرنے کے نہیں قابل الگ الگ

اک شیفتہ ہے زلف کا اک مبتلاے رخ

ہیں شیخ و برہمن ترے قائل الگ الگ

میرے تمہارے بلبل و گل منہ چڑھیں گے کیا

دونوں کو کر چکا ہوں میں قائل الگ الگ

مکر و نفاق عشق سے مدت تلک رہا

میں دل سے اور مجھ سے مرا دل الگ الگ

تا ہو تمیز لذت بادام و شہد میں

بوسوں کا چشم و لب کے ہوں سائل الگ الگ

کس کس کو دوں میں سخت مصیبت میں جان ہے

رخسار و زلف مانگتے ہیں دل الگ الگ

کیا مہر و ماہ کیا گل و شمشاد آئنہ

سب ہو چکے ہیں تیرے مقابل الگ الگ

یکتا تو وہ ہے مومن و کافر یہود و گبر

وحدت کے تیرے سب ہیں یہ قائل الگ الگ

پائے نگاہ اہل نظر کے پڑے ہیں نیل

رخسار نازنیں پہ نہیں تل الگ الگ

آگے تو ساتھ رہتے تھے ہم ہالہ ساں پر اب

رہتا ہے ہم سے وہ مہ کامل الگ الگ

انداز و ناز و غمزہ و شوخی و کجروی

ہیں ایک میرے دم کے یہ قاتل الگ الگ

قبضے پہ ہاتھ رکھ کے قلقؔ نے ملائی آنکھ

کل ہر رقیب سے سر محفل الگ الگ

ارشد علی خان قلق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(152) ووٹ وصول ہوئے

Related Poetry

Your Thoughts and Comments

Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag by Arshad Ali Khan Qalaq - Read Arshad Ali Khan Qalaq's best Shayari Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag at UrduPoint. Here you can read the best poetry Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag of Arshad Ali Khan Qalaq. Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag is the most famous poetry by Arshad Ali Khan Qalaq. People love to read poetry by Arshad Ali Khan Qalaq, and Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag by Arshad Ali Khan Qalaq is best among the whole collection of poetry by Arshad Ali Khan Qalaq.

Arshad Ali Khan Qalaq is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Arshad Ali Khan Qalaq. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Arshad Ali Khan Qalaq. On this page, you can read Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag by Arshad Ali Khan Qalaq. Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag is the best poetry by Arshad Ali Khan Qalaq.

Read the Arshad Ali Khan Qalaq's best poetry Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Arshad Ali Khan Qalaq's best Shayari, Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag of Arshad Ali Khan Qalaq will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Arshad Ali Khan Qalaq, regard it as the best poetry Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag of Arshad Ali Khan Qalaq.

We recommend you read the most famous poetry, Hain Tegh-e-naz-e-yar Ke Bismil Alag Alag of Arshad Ali Khan Qalaq here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.