Hum Wo Panchi Jin K Gher Se Dorr Baseere Hain

ہم وہ پنچھی جن کے گھر سے دور بسیرے ہوتے ہیں

ہم وہ پنچھی جن کے گھر سے دور بسیرے ہوتے ہیں

رات کو خواب خیال کے لشکر دل کو گھیرے ہوتے ہیں

سوچ سوچ کر مر جاتی ہیں خوابوں کی تعبیریں بھی

خواب جو تیرے ہوتے ہیں اور خواب جو میرے ہوتے ہیں

عشق کا حاصل کچھ بھی ہو اک نسبت بھی کیا کم شے ہے

کچھ ناں کچھ تو ہوتے ہیں جو بال بکھیرے ہوتے ہیں

دل کی شمعیں جلنے دو ان آنکھوں کو روشن کر لو

کہتے ہیں دل جلتے ہیں تو دور اندھیرے ہوتے ہیں

قسمت لکھتی جاتی ہے ہم اس کو پڑھتے جاتے ہیں

ارشدؔ اب تو یادوں ہی میں گھر کے پھیرے ہوتے ہیں

ارشد لطیف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(536) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Arshad Lateef, Hum Wo Panchi Jin K Gher Se Dorr Baseere Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Arshad Lateef.